یہ آنکھ بھی ، یہ خواب بھی ، یہ رات اسی کی

تاجدار عادل

یہ آنکھ بھی ، یہ خواب بھی ، یہ رات اسی کی ہر بات پہ یاد آتی ہے ہر بات اسی کی جگنو سے چمکتے ہیں اسی یاد کے دم سے آنکھوں میں لیے پھرتے ہیں سوغات اسی کی ہر شعلے کے پیچھے ہے اسی آگ کی صورت ہر بات کے پردے میں حکایات اسی مزید پڑھیں

یاد میں تیری جہاں کو بھولتا جاتا ہوں میں

یاد میں تیری جہاں کو بھولتا جاتا ہوں میں بھولنے والے، کبھی تجھ کو بھی یاد آتا ہوں میں اک دھندلا سا تصور ہے کہ دل بھی تھا یہاں اب تو سینے میں فقط اک ٹیس سی پاتا ہوں میں  آرزؤں کا شباب اور مرگ حسرت ہائے ہائے جب بہار آئی گلستاں میں تو مرجھاتا مزید پڑھیں

چہرہ اس ایک شخص کا کافی نہیں ہے کیا

چہرہ اس ایک شخص کا کافی نہیں ہے کیا یہ چاند آسماں پہ اضافی نہیں ہے کیا لوٹا نہیں رہا ہے مجھے میرا اپنا عکس یہ بات آئینے کے منافی نہیں ہے کیا اک شام جو گزاری تھی ہم نے ستارہ وار وہ شام عمر بھر کی تلافی نہیں ہے کیا اچھی گزر رہی ہے مزید پڑھیں

رنگ ، خوشبو میں اگر حل ہو جائے

رنگ ، خوشبو میں اگر حل ہو جائے وصل کا خواب مکمل ہو جائے چاند کا چوما ہُوا سرخ گلاب تیتری دیکھے تو پاگل ہو جائے میں اندھیروں کو اُجالُوں ایسے تیرگی آنکھ کا کاجل ہو جائے دوش پر بارشیں لے کے گُھومیں مَیں ہوا اور وہ بادل ہو جائے نرم سبزے پہ ذرا جھک مزید پڑھیں

عکسِ شکستِ خواب بہر سُو بکھیریے

عکسِ شکستِ خواب بہر سُو بکھیریے چہرے پہ خاک ،زخم پہ خوشبو بکھیریے کوئی گزرتی رات کے پچھلے پہر کہے لمحوں کو قید کیجئے ، گیسو بکھیریے دھیمے سُروں میں کوئی مدھر گیت چھیڑیے ٹھہری ہُوئی ہَواؤں میں جادُو بکھیریے گہری حقیقتیں بھی اُترتی رہیں گی پھر خوابوں کی چاندنی تو لبِ جُو بکھیریے دامانِ مزید پڑھیں