وزیراعظم نے یو اے ای میں ملازمت سے متعلق جواب جمع کرادیا

وزیراعظم نواز شریف نے متحدہ عرب امارات میں ملازمت سے متعلق سپریم کورٹ میں جواب جمع کرادیا۔جواب وزیر اعظم کے وکیل خواجہ حارث نے جمع کرایا۔

پاناما کیس کی آخری سماعت کے موقع پر وکیل خواجہ حارث نے عدالت سے استدعا کی تھی کہ وہ تحریری جواب جمع کرانا چاہتے ہیں جس پر عدالت نے انہیں ایک دن کی مہلت دی تھی، جس پر انہوں نے وزیراعظم کی یو اے ای میں ملازمت سے متعلق تحریری جواب جمع کرادیا۔

مزید پڑھیں  سید صادقین احمد نقوی

وزیراعظم نواز شریف کی جانب سے تحریری جواب میں کہا گیا ہے کہ متحدہ عرب امارات میں اقامہ لیا گیا تھا تاہم جے آئی ٹی کے الزام کی تردید کرتا ہوں کہ یو اے ای کی ملازمت چھپائی۔

مزید پڑھیں  نواز شریف کی نااہلی: بین الاقوامی میڈیا نے کیا لکھا؟

جواب میں کہا گیا ہے کہ یو اے ای کا اقامہ 2013 کے کاغذات نامزدگی میں ظاہر کیا ہے اور کاغذات نامزدگی جمع کراتے وقت اقامے اور ملازمت کو پاسپورٹ کی کاپی میں ظاہر کیا گیا تھا۔

سپریم کورٹ میں جمع کرائے گئے جواب میں وزیراعظم کی جانب سے کہا گیا ہے کہ کاغذات نامزدگی میں کوئی خصوصی کالم نہیں تھا اس لئے ملازمت کو الگ سے ظاہر نہیں کیا گیا۔

مزید پڑھیں  وطن واپسی؛ نواز شریف صاحبزادی مریم نواز کے ہمراہ ابوظہبی پہنچ گئے

واضح رہے کہ پاناما عمل درآمد بینچ نے 21 جولائی کو فریقین کے دلائل سننے کے بعد کیس کا فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں