مے ویدر نے میک گریگر کو ’ناک آؤٹ‘ کردیا

امریکی باکسر فلائیڈ مے ویدر نے سال کے سب سے بڑے باکسنگ مقابلے میں مکسڈ مارشل آرٹس (ایم ایم اے) کے بے تاج بادشاہ کونر میک گریگر کو ٹیکنیکل ناک آؤٹ کردیا۔
امریکی شہر لاس ویگاس میں لڑی جانے والی سال کی سب سے بڑی فائٹ ہوئی تھی جس میں مے ویدر اور میک گریگر کی جانب سے بہترین کھیل کا مظاہرہ کیا گیا۔
دنیائے بکسنگ کی اس سب سے بڑی فائٹ کے دوران اعصاب شکن مقابلہ دیکھنے میں آیا جس میں ابتداء سے ہی مکسڈ مارشل آرٹس کے ماہر کونر میک گریگر کا پلڑا بھاری رہا۔
میچ کے ابتدائی 6 راؤنڈز تک مقابلہ برابری کے بنیاد پر ختم ہوا تاہم 7ویں راؤنڈز کے بعد مے ویدر نے اپنی باکسنگ تجربے کو بھرپور طریقے سے استعمال کرتے ہوئے حریف کھلاڑی کو چند پوائنٹس سے پیچھے دھکیلنے کی کامیاب کوشش کی۔
آئرش مارشل آرٹس کے کھلاڑی باکسنگ میں کم تجربہ ہونے کے وجہ سے میچ کے اختتامی لمحات میں تھکاوٹ کا شکار ہوئے جس کا فلائیڈ مے ویدر نے بھر پور فائدہ اٹھایا اور حریف کھلاڑی کو 10ویں راؤنڈ میں ٹیکنیکل بنیادوں پر ناک آؤٹ کردیا۔
یہ فلائیڈ مے ویدر کے کیریئر کی 50ویں فائٹ تھی جسے انہوں نے اپنے نام کیا اور اس کے ساتھ ہی مے ویدر نے ہم وطن باکسر روکی مارکیانو کی مسلسل 49 باکسنگ فائٹس میں فتوحات کا ریکارڈ بھی توڑ دیا۔
مے ویدر نے میک گریگو کو 10ویں راؤنڈ میں تکنیکی بنیاد پر ناک آؤٹ کیا — فوٹو/ اے ایف پی
اس موقع پر فاتح باکسر فلائیڈ مے ویدر نے اپنی جیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میک گریگر امید سے کئی زیادہ خطرناک حریف ثابت ہوئے۔
ان کا کہنا تھا کہ ’میک گریگر نے مقابلے کے دوران باکسنگ کے اس کھیل کے مختلف زاویے استعمال کیے لیکن میں نے میک گریگر کے خلاف اپنا گیم پلان بنایا ہوا تھا۔‘
آخر میں انہوں نے اپنی ریٹائر منٹ کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے باکسنگ کیریئر سے بہت خوش ہیں اور انہیں کسی سے کوئی شکایت نہیں۔
آئرش کھلاڑی کونر میک گریگر نے اس فائٹ کو اپنے کیریئر کی بہترین فائٹ قرار دیا، انہوں نے کہا کہ میچ کے دوران انہیں ایسا لگ رہا تھا کہ انہیں مقابلے میں برتری حاصل ہے۔
فاتح کھلاڑی کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ مے ویدر میچ کے دوران مجھ سے زیادہ منظم تھے اور مجھ سے زیادہ بہتر کھیل پیش کیا۔
مکسڈ مارشل آرٹس کے کھلاڑی کونر میک گریگر نے کہا کہ انہیں نہیں لگتا کہ وہ دوبارہ کبھی باکسنگ کی فائٹ کر پائیں گے۔
دس کروڑ امریکی ڈالر کی یہ سپر فائٹ دیکھنے کے لیے باکسنگ کے سپر اسٹار مائیک ٹائسن، گلوکار اوزی اوزبرون، امریکی باسکیٹ بال کے کھلاڑی لی برون جیمز سمیت کئی کھیلوں کے سپر اسٹار اور ہالی ووڈ کے ستارے موجود تھے۔
خیال رہے کہ دو برس قبل فلائیڈ مے ویدر نے فلیپائن کے باکسر مینی پکاؤ کو شکست دی تھی جو کہ باکسنگ کی تاریخ کی سب سے بڑی فائٹ تھی جس میں فاتح باکسر کو 60 کروڑ امریکی ڈالر حاصل ہوئے۔

مزید پڑھیں  عہد تمیمی ۔۔۔فلسطینی نسل نو کا عظیم شاہکار

اپنا تبصرہ بھیجیں