سعودی عرب میں سینما کی واپسی

ریاض : سعودی عرب میں 40 برس کے بعد آج ایک مرتبہ پھر سینما ہاؤس کی واپسی ہو رہی ہے۔
سعودی عرب میں آج 35 برس کے طویل وقفے کے بعد سنیما گھر کھلنے سے پہلے مشہور فلم ’بلیک پینتھر‘ کی ٹیسٹ سکریننگ کی جا رہی ہے۔
دنیا میں سنیما گھروں کی سب سے بڑی کمپنی اے ایم سی ’بلیک پینتھر‘ کی ٹیسٹ سکریننگ کرے گی جسے سعودی عرب کے سنیما گھروں میں فلم چلانے کا لائنس جاری کیا گیا ہے۔
عرب میڈیا کے مطابق گزشتہ صدی کے وسط میں سعودی عرب کے اندر سینما شو ایک عام بات تھی، اس دوران مملکت کے چار بڑے شہروں میں سینما ہاؤسز پھیل گئے تھے۔
سعودی عرب میں سینما ہاؤسز میں فلموں کی نمائش کا سلسلہ 80ء کی دہائی کے آغاز تک جاری رہا۔ اس کے بعد “شرعی خلاف ورزیوں” اور معاشرتی اقدار کے منافی ہونے کے سبب اُس کو مکمل طور پر ختم کر دیا گیا۔
دسمبر 2017ء میں ایک تاریخی فیصلے کے ذریعے سعودی عرب میں سرکاری طور پر سینما کی واپسی کا اعلان کیا گیا۔
تقریبا چار دہائیوں کے بعد سینما کی واپسی کے ساتھ امید ہے کہ فنّی اور ثقافتی احیاءِ نو دنیا کے سامنے سعودی عرب کی ایک نئی تصویر پیش کرے گا۔

مزید پڑھیں  بھارت کو خمیازہ بھگتنا پڑیگا،آئی ایس پی آرکے صبر کا پیمانہ لبریز،اعلان کردیا

اپنا تبصرہ بھیجیں