رنگوں سے تبدیلی لائیں

کائنات کی تخلیق پر غور کریں تو واضح ہوتا ہے کہ یہ مختلف رنگوں کے حسین امتزاج کا مرکب ہے ۔ اگر تصویرِ کائنات سے رنگ مٹا دئے جائیں تو اس میں کوئی کشش باقی نہیں رہے گی ۔ کائنات میں بہت سی چیزیں اپنے رنگوں کی وجہ سے ہی پہچان رکھتی ہیں۔جیسے نیلا اور وسیع و عریض کہا جائے تو ذہن میں آسمان کا تصور آتا ہے، پیلا رنگ سورج اور ہرا بھرا کہا جائے تو درختوں اور پودوں کا تصور ذہن میں آتا ہے۔

معروف مذہبی اسکالر اور سائنس ٹیچر جناب شمس الدین عظیمی صاحب اپنی کتاب رنگ و روشنی سے علاج میں بتاتے ہیں کہ انسان نے اب تک رنگ کی تقریباً ساٹھ قسمیں معلوم کی ہیں، ان میں بہت تیز نگاہ والے ہی امتیاز کر سکتے ہیں جس چیز کو اس کی نگاہ محسوس کرتی ہے۔اس کو رنگ، روشنی ، جواہرات اور آخر میں کم و بیش پانی سے تعبیر کرتا ہے۔

رنگوں کے ذریعہ علاج بھی دریافت کیا گیا اور کامیاب ثابت ہوا۔ کلر تھراپی کے ذریعےعلاج نا صرف آسان بلکہ سستا بھی ہوتا ہے۔بچوں کی مونٹیسوری کو مختلف رنگوں سے اس لئے سجایا جاتا ہے کہ خوبصورتی کے ساتھ ساتھ بچوں کے لئے اس میں کشش پیدا ہو۔ اسی طرح شادی بیاہ خوشی کے موقع پرمہندی اور دیگر فنکشن میں خوب رنگ برنگ کی سجاوٹ کی جاتی ہے جس سے ماحول میں مزیدرونق اورخوشیاں بکھرجاتی ہیں۔ ہماری روزمرہ کی زندگی پررنگ اثر اندازہوتے ہیں۔ اگر دنیا میں رنگ نہیں ہوتے تو زندگی بہت بے رونق اور بور ہوتی۔ بہت سے لوگ اس بات سے لا علم ہیں کہ صحیح رنگوں کے انتخاب سےوہ اپنی زندگی میں بہت سی مثبت تبدیلیاں لا سکتے ہیں اور کافی حد تک اپنی چھوٹی چھوٹی الجھنوں سے چھٹکارہ بھی حاصل کر سکتے ہیں۔
جیسا کہ نیلا رنگ ذہنی سکون اور یکسوئی حاصل کرنےمیں مددگار ہوتا ہے۔ اسی طرح اگر بیڈ رومز میں گہرا نیلا یا ہلکا آسمانی رنگ استعمال کیا جائے توماحول میں سکون پیدا ہوتا ہے۔ نیلا رنگ زیادہ تر لوگوں کی چوائس ہوتا ہے۔ بات کی جائے لال رنگ کی تو لال رنگ خوشی کی علامت بھی ہوتا ہے۔ایک کمرے میں اگر لال رنگ کے گلاب سے سجاوٹ کردی جائے اور دوسرے کمرے میں کسی اور رنگ کی تو لال گلاب والا کمرہ زیادہ جاذبِ نظر اور خوبصورت لگے گا۔ لال رنگ کو اگر کسی بھی دوسرے رنگ کے ساتھ استعمال کیا جائے تو اس رنگ میں خوبصورتی پیدا ہوجاتی ہے۔ لال رنگ جذبات کوابھارتا ہے اوریہ محبت کی علامت بھی ہے۔

مزید پڑھیں  جنسی تعلقات کے مطالبے سے پارلیمنٹ بھی محفوظ نہیں

ہرارنگ جو کہ تازگی بخشتا ہے اورعام سی بات ہے کہ ہرابھراسبزہ کس کو نہیں بھاتا، ہرے بھرے درخت اور سبزہ دیکھ کے طبیعت پرخوشگواراحساس گزرتا ہے۔ ہرارنگ پسند کرنے والے لوگ خود اعتماد اور آزادی پسند ہوتے ہیں۔

مزید پڑھیں  گورو اروڑا کی جنس میں تبدیلی کی تصاویر وائرل

اکثر ہم سب لوگ باہر کھانا کھانے جاتے ہیں تو آپ نے ریسٹورینٹس میں ایک بات نوٹ کی زیادہ تر کھانے پینے کے ہوٹلوں میں زرد یا نارنجی رنگ کی دیواریں رنگی ہوتی ہیں یا ڈیکوریشن میں نارنجی رنگ استعمال ہوتا ہے کیونکہ نارنجی رنگ بھوک بڑھاتا ہے، اسی لئے گھر کے ڈائنگ ایریا میں بھی ایک دیوار نارنجی رنگ کی پینٹ کر دی جائے تو بہتر ہوتا ہے۔ کالا رنگ خوشی اور غم دونوں میں اہمیت رکھتا ہے۔ کالا رنگ اتھارٹی اور پاور کو ظاہر کرتا ہے۔ بڑے بڑے فنکشنز میں سیلیبریٹیز کالےرنگ کے لباس کو ترجیح دیتے ہیں۔ کالا رنگ کی خاصیت یہ ہے کہ یہ رنگ چھپاتا بھی ہے اور نمایاں بھی کرتا ہے۔

رنگوں کے صحیح استعمال سے نا صرف ماحول میں بلکہ شخصیت میں بھی مناسب تبدیلی لائے جاسکتی ہے۔جیسے گرمیوں کےموسم میں ہلکے رنگ کے لباس آنکھوں کو ٹھنڈک بخشتے ہیں۔ہلکاگلابی،آسمانی،سفید،گرےرنگ کےپہناوےگرمیوں میں جاذبِ نظر لگتے ہیں۔ اسی طرح سرد علاقوں میں رہنے والے لوگ یا سرد موسم میں گہرا اور شوخ رنگ بھاتا ہے۔خاتون ہونے کے لحاظ سے عام سا تجربہ ہے کہ دن دھاڑے اگر گہری سرخ لپ اسٹک لگا کے باہر نکل لیا جائے تو انتہائی برا تاثر پیدا ہوتا ہے جب کہ یہ ہی رنگ شام کے اوقات میں کسی آؤٹنگ یا پارٹی میں لگا لیا جائے تو شخصیت میں چار چاند لگ جاتے ہیں۔

مزید پڑھیں  چیف جسٹس کا رویہ، ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج لاڑکانہ نے استعفیٰ دے دیا

اسی طرح اگر آپ کا بیڈ روم یا گھر چھوٹا ہے تو دیواروں پرہلکارنگ کروایاجائےاس سے ماحول کھلا لگتا ہے۔لال رنگ حتی الامکان دیواروں پرکرنےسےگریزکریں یا بیڈ شیٹ وغیرہ نا استعمال کریں، لال رنگ سے خون کی روانی تیز ہوتی ہے اور غصہ بھی آتا ہے۔

دنیا کے مختلف ممالک میں رنگوں کے استعمال پرریسرچ کی گئی ہےاورنا صرف رنگوں کی اہمیت کو اجاگر کیا گیا ہے بلکہ اس سے مستفید بھی ہوا جا رہا ہے۔ ذرا سی سمجھ بوجھ سے آپ بھی رنگوں کے صحیح استعمال سے نا صرف ماحول میں مناسب تبدیلیاں لا سکتے ہیں بلکہ اپنی شخصیت کو بھی مزید نکھار سکتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں