آصف زرداری اور انکے ’’پیر صاحب‘‘ کے درمیان دوریاں بڑھنے لگیں

کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیرمین آصف علی زرداری اور ان کے پیر اعجاز شاہ کے درمیان دوریاں بڑھنے لگی ہیں اور اب دونوں کے درمیان پہلے سی قربتیں نہیں رہیں۔ تفصیلات کے مطابق چند برس قبل پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصفر زرداری جب ملک کے صدر تھے، تو وہ پیر اعجاز شاہ کے بڑے معتقد تھے، اعجاز شاہ ناصرف ایوان صدر میں مقیم تھے، بلکہ آصف زرداری بعض معاملات میں ان سے مشاورت بھی کرتے تھے، پیر اعجاز ہی کے مشورے پر آصف زرداری اسلام آباد چھوڑ کر کراچی میں کئی کئی دن قیام کرتے تھے، لیکن اب نہ تو وہ دن رہے اور نہ ہی دونوں کے درمیان تعلقات میں وہ گرم جوشی، جو ماضی کا خاصہ تھی، بلکہ یہ کہنا زیادہ ٹھیک ہوگا کہ دونوں کے درمیان بہت دوریاں پیدا ہوگئی ہیں اور صورتحال یہ ہے کہ گزشتہ روز جب پیر اعجاز شاہ نے آصف زرداری سے ملاقات کی کوشش کی، تو انہیں اس میں بھی ناکامی ہوئی۔ پیر اعجاز شاہ نے آصف زرداری سے دوریوں کی خبروں کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ مخالفین نے ہمارے درمیان غلط فہمیاں پیدا کی ہیں، میرے بارے پھیلایا گیا کہ میں صدر ممنون حسین اور نواز شریف کے قریب ہوگیا ہوں، حالانکہ حقیقت تو یہ ہے کہ میں نہ کبھی ممنون حسین سے ملا اور نہ ہی نواز شریف کے وزیراعظم بننے کے بعد ان سے ملاقات ہوئی۔

مزید پڑھیں  سعودی عرب میں سینما کی واپسی

اپنا تبصرہ بھیجیں